43

ٹرمپ نے اپنے مشير قومی سلامتی کو عہدے سے ہٹادیا

امريکی صدر ڈونلڈٹرمپ نے مشير قومی سلامتی جان بولٹن کو عہدے سے ہٹا ديا۔

اپنے ايک ٹويٹ ميں ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ميں اور ميری انتظاميہ جان بولٹن کی کئی تجاویز سے متفق نہیں، جان بولٹن کو کہا تھا کہ وائٹ ہاؤس ميں ان کی خدمات کی مزيد ضرورت نہيں۔

ٹرمپ کا کہنا تھا کہ اُن سے استعفیٰ طلب کيا جو انھوں نے آج صبح جمع کرا ديا ہے ۔ قومی سلامتی کے نئے مشیر کا اعلان آئندہ ہفتے کیا جائے گا۔

دوسری جانب امریکی صدر نے کہا کشمیر پر میری پیشکش اپنی جگہ موجود ہے اور مسئلے کے حل کےلیے دونوں ملکوں کی مدد کرنا چاہتا ہوں۔

ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ کشمیر پر بھارت اور پاکستان کے درمیان تنازعہ جاری ہے البتہ گزشتہ 15 دن سے ميرے خيال ميں اس کی شدت کم ہوئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ميں نے دونوں ممالک سے بہت اچھی بات چيت کی لہٰذا اگر وہ چاہيں تو ميں ان کی مدد کرسکتا ہوں۔

افغان امن مذاکرات پر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ بات چیت مکمل طور پر ختم ہو چکی ہے اور طالبان کے ساتھ مذاکرات منسوخ کرنے کا فیصلہ میں نے خود کیا۔ اس بارے ميں کسی سے مشاورت نہیں کی۔

 

 

3 days ago

3 days ago

1 week ago

1 week ago

1 week ago

1 week ago

 

 

 

 

 

 

 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں